بیٹی کی بازیابی کیلئے والدہ نے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کر لیا

14

اسلام آباد:اسلام آباد پولیس دو ماہ سے لاپتہ 14 سال کی کم عمر بچی کا سراغ لگانے میں ناکامی پر بچی کی والدہ نے بازیابی کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کر لیا ۔

عدالت نے اسلام آباد پولیس سے 30 جنوری تک جواب طلب کرلیا والدہ کی طرف سے درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ گزشتہ سال 18 نومبر کو بیٹی کو مبینہ طور پر اغواء کیا گیا مرکزی ملزم کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے پولیس تاحال بچی کو برآمد نہیں کرسکی درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی کہ پولیس کو بچی کی برآمدگی کا حکم دیا جائے عدالت نے تفتیشی افسر اور ایس ایچ او تھانہ سنگجانی سے جواب طلب کر لیا۔

عدالت کو بتایا گیا کہ کم عمر بچی گھروں میں کام کرتی ہیں کام پر گئی مگر واپس نہیں آئی شک ہے لڑکی کو نامعلوم شخص زیادتی کی نیت سے بھگا کر لے گیا ہے بچی کو ڈھونڈ کر ملزمان کیخلاف کارروائی کی جائے بچی کی لاپتہ ہونے کے خلاف تھانہ سنگجانی میں مقدمہ درج ہے کیس کی سماعت چیف جسٹس عامر فاروق نے کی عدالت نے کیس کی مزید سماعت30 جنوری تک ملتوی کر دی ۔