تحریک انصاف کے مزید43 ارکان قومی اسمبلی کے استعفے منظور

18

اسلام آباد:سپیکر قومی اسمبلی نے تحریک انصاف کے مزید 43 ارکان قومی اسمبلی کے استعفے منظور کر لیے، اسپیکر قومی اسمبلی نے الیکشن کمیشن کو ارکان کو ڈی سیٹ کرنے کا معاملہ بھجوا دیا، قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کے مطابق سپیکر قومی اسمبلی نے تحریک انصاف کے ارکان کی استعفی واپسی کی درخواستیں مسترد کر دیں، موقف اپنایا کہ درخواستیں قواعد کے مطابق نہیں تھیں ،تفصیل کے مطابق تحریک انصاف کی اپوزیشن لیڈر، پارلیمانی لیڈر اور چئیرمین پی اے سی کا عہدہ لینے کی کوششیں دم توڑ گئیں۔

سپیکر قومی اسمبلی نے تحریک انصاف کے 43 ارکان قومی اسمبلی کے استعفے منظور کر کے معاملہ الیکشن کمیشن کو بھجوا دیا۔ سپیکر قومی اسمبلی نے ان ارکان کو ڈی سیٹ کرنے کی درخواست کی۔سپیکر قومی اسمبلی نے تحریک انصاف کے اراکین کے استعفی 4 مرحلوں میں منظور کیے، پہلے مرحلے میں گیارہ استعفی منظور کیے، دوسرا مرحلے میں 35 جبکہ تیسرے مرحلے میں بھی مذید 35 استعفی منظور کیے گئے۔ سپیکر نے چوتھے مرحلے میں 43 استعفیٰ منظور کر کے الیکشن کمیشن کو ڈی سیٹ کرنے کا خط لکھ دیا۔

قومی اسمبلی میں اس وقت تحریک انصاف کے 21 منحرف اراکین موجود ہیں، اس کے علاوہ ناصر موسی زئی اپنا استعفی واپس لے چکے جبکہ مزید دو ارکان نے سپیکر کو خط لکھ کر چھٹی لے لی تھی۔ چئیرمین تحریک انصاف سمیت چار نو منتخب ارکان محمود مولوی، ندیم خان اور راحیلہ نے تاحال حلف نہیں لیا۔قومی اسمبلی میں اس وقت تحریک انصاف کے 21 منحرف اراکین موجود ہیں، اس کے علاوہ ناصر موسی زئی اپنا استعفی واپس لے چکے جبکہ مزید دو ارکان نے سپیکر کو خط لکھ کر چھٹی لے لی تھی۔چیئرمین تحریک انصاف سمیت چار نو منتخب ارکان محمود مولوی، ندیم خان اور راحیلہ نے تاحال حلف نہیں لیا۔

سپیکر قومی اسمبلی نے پی ٹی آئی ارکان کے استعفے منظور کر کے الیکشن کمیشن کو بھجوا دیئے جن کی سمری الیکشن کمیشن کو موصول ہو گئی ہے۔ پی ٹی آئی کے اب تک 123 ارکان کے استعفے منظور کر لئے گئے جبکہ پی ٹی آئی کے منحرف اراکین کے علاوہ صرف 2اراکین قومی اسمبلی میں باقی رہ گئے ہیں ۔دو اراکین کے استعفے ان کی چھٹی کے درخواست کے باعث منظور نہیں کیے گئے۔

ذرائع اسپیکر آفس کے مطابق پی ٹی آئی کے اب تک 123اراکین کے استعفے منظور کیے جا چکے ہیں.جن ارکان اسمبلی کے استعفے منظور کئے گئے ان میں ریاض فتیانہ ، سردار طارق حسین ، محمد یعقوب شیخ ، مرتضی اقبال ،سردار محمد خان لغاری، حاجی امتیاز چوہدری، لال چند اور جواد حسین شامل ہیں۔نوشین حامد، منزہ حسن، صائمہ ندیم ، تاشفین صفدر،غلام بی بی بھروانہ ،فاروق اعظم ، ملک نصراللہ ،صوبیہ کمال خان، ظل ہما، رخسانہ نوید کا استعفیٰ بھی منظور، غزالہ سیفی اورطارق صادق، صاحبزادہ محبوب سلطان، شاہین نیاز، شنیلہ روتھ، بھی لسٹ میں شامل ہیں، سپیکر قومی اسمبلی نے گزشتہ 8 روزکے اندر113 استعفی منظور کئے۔

پی ٹی آئی اراکین قومی اسمبلی نے گزشتہ روز استعفے واپس لینے کیلئے الیکشن کمیشن کو ای میلز کی تھیں۔ پی ٹی آئی اراکین قومی اسمبلی کے استعفے چار مرحلوں میں منظور کئے گئے، پہلے میں 11، دوسرے اور تیسرے مرحلے میں 35، 35اور پھر 43 استعفے منظور کئے گئے ہیں۔